GAUHAR LAKHNAWI – گوہر لکھنوی

(تعارف۔علی امام زیدی گوھر لکھنوی (جانشین انیس و شدید

Intro provided by Syed Ali Imam Gauhar Rizvi 

MARASI E GAUHAR LAKHNAWI -مراثی گوہر لکھنوی

برہمی بزم جہاں میں ہے غداوت کے سبب

BARHAMI BAZM E JAHAN MAIN HAI ADAWAT KE SABAB

بزم جہاں میں روز نیا انقلاب ہے

BAZM E JAHAN MAIN ROZ NAYA INQUILAB HAI

جاتا ہے اب شکار کو دشت وفا کا شیر

JATA HAI AB SHIKAR KO DASHT E WAFA KA SHER

جب نکلا شیر خیمے سے مشک و علم لۓ

JAB NIKLA SHER KHAIMAYSE MASHK O ALAM LIYE

جس گھڑی صبح شہادت کا ستارہ نکلا

JIS GHARI SHUBH E SHAHADAT KA SITARA NIKLA

سبط نبی جو وارد دشت ستم ہوا

SIBTE NABI JO WARID E DASHT E SITAM HOA

قبر رسول چھوڑ کے شبیر جب چلے

QABR E RASOOL CHORH KE SHABBIR JAB CHALAY

کربلا میں شب قتل سہ عالم آئ

KARBALA MAIN SHABE QATL E SHAH E ALAM AAYI

مقصود مرا مدح شہ خوش خصال ہے

MAQSOOD MERA MADH E SHAH E KHUSH KHISAL HAI

میں زیب دہ طرہ دستار وفا ہوں

MAIN ZEB DAHE TURRA E DASTAR E WAFA HOON

نکلا علی کا شیر حرم سے جلال میں

NIKLA ALI KA SHER HARAM SE JALAL MAIN

وغا کے شوق میں زینب کے لال آتے ہیں

WAGHA KE SHAUQ MAIN ZAINAB KE LAL AATAY HAIN

مکمل مراثی = 12

TAREEKH E ISLAM AZ QURAN

 

TAREEKH E ISLAM AZ QURAN P1

TAREEKH E ISLAM AZ QURAN P2

TAREEKH E ISLAM AZ QURAN P3

TAREEKH E ISLAM AZ QURAN P4

 

Total Page Visits: 1483 - Today Page Visits: 2

eMarsiya – Spreading Marsiyas Worldwide