SHAHID NAQVI

3+

★ کلیم آل عبا سیّد شاہد نقوی ★

شاہد نقوی بہت بڑے شاعر اور مرثیہ نگار تھے ۔ شاہد شاہد نقوی نے کئ مرثیے ، قطعات ، سلام اور نوحے لکھے ۔ زیارت ناحیہ کا ترجمہ بھی کیا ۔ یقینا جہاں جہاں ادب پسند حضرات ہیں ان کا مرحوم سے دلی ربط اور لگاؤ ہے ۔ انہوں نے اپنے گھر میں مرثیوں کی مجالس کا عشرہ شروع کروایا جو اب بھی جاری ہے ۔ ان کا یہ کلام جب تک پڑھا جاۓ گا ان کا نام زندہ رہے گا. یہ نوحہ جس سوز سے عزت لکھنوی نے پڑھا وہ بھی یادگار ہے

وہ کربلا و شام غریباں وہ تیرگی
وہ زینب حزیں وہ حفاظت خیام کی
آیا وہ اک سوار قریب خیام شاہ
بیٹی علی کی غیض میں سوئے فرس بڑھی
الٹی نقاب چہرے سے اپنے سوار نے
پیش نگاہ زینب مظلوم تھے علی
ہر چند صا برہ تھی بہت بنت فاطمہ
بے ساختہ لبوں پہ فریاد آگئی
زینب نے کہا باپ کے قدموں سے لپٹ کر
اب آئے ہو بابا

جب لٹ گیا پردیس میں اماں کا بھرا گھر
اب آئے ہو بابا

بابا اگر آنا ہی تھا خالق کی رضا سے
اس وقت نہ آئے
جب خاک پہ دم توڑ رہا تھا میرا اکبر
اب آئے ہو بابا

کٹ کٹ کے گرے نہر پہ جب بازوئے عباس
اور کوئی نہ تھا پاس
اس وقت صدا آپ کو دیتا تھا دلاور
اب آئے ہو بابا

جب فرش زمین بام و فلک لرزہ فشاں تھے
اس وقت کہاں تھے
جب باپ کے چلو میں تھا خون علی اصغر
اب آئے ہو بابا

جب بھائی کا سر کٹتا تھا میں دیکھ رہی تھی
حضرت کو صدا دی
سر کھولے ہوئی روتی تھی میں خیمے کے در پر
اب آئے ہو بابا

جب لوگ بچا لے گئے لاشے شہدائ کے
حق اپنا جتا کر
بس اک تن شبیر تھا پامالی کی زد پر
اب آئے ہو بابا

جب بالی سکینہ کے گوہر چھینے گئے تھے
لگتے تھے طمانچے
حسرت دے مجھے دیکھتی تھی بانوئے مضطر
اب آئے ہو بابا

اک رات کے مہماں ہیں پھر قید سلاسل
اب سخت ہے منزل
بازار میں ہم صبح کو جائیں گے کھلے سر
اب آئے ہو بابا

کیا آپ نے فردوس سے یہ دیکھا نہ ہو گا
اک حشر بپا تھا
جب پشت سے بیمار کی کھینچا گیا بستر
اب آئے ہو بابا

شاہد رخ حیدر پہ بکھر جاتے تھے آنسو
جب کھول کے گیسو
چلاتی تھی زینب میرے بابا میری چادر

اب آئے ہو بابا

Special Thanks to Zeeshan Zaidi for this short Intro

MARASI E SHAHID NAQVI 

AETEBAR E RESALAT

ALI KA SHER

BAZATUR RASOOL

DUA E KHALIL

INQUILAB E FIKR

INSANIAT SHAOOR E SADAQAT KA NAM HAI

ILM KA SAFAR

KHOON AUR PAIGHAM

NALA E JARAS

NAMOOD E KARBALA

NEYABAT E RASOOL

PAIGHAMBAR E ASHTI

SHAREEKATUL HUSSAIN

SOORAJ KA SAFAR

ZALZALA E SHAM

ZARB E MAZLOOMIAT

TOTAL MARSIYAS = 16

Total Page Visits: 651 - Today Page Visits: 1

eMarsiya – Spreading Marsiyas Worldwide