SAHIR LAKHNAWI

1+

ساحر لکھنوی

معروف شاعر اور ماہرِ اردو لسانیات ساحر لکھنوی کا اصل نام سید قائم مہدی نقوی ہے، عرفیت جمشید نواب جو بعد میں جمشید اختر بنی ۔ولادت 6 ستمبر 1931  کھارا در کراچی ۔تعلیم ایم اے ، ایل ایل بی ۔ ۔ڈی ، آئ ،ایل،ایل ، 

شاعری کی ابتدا سلام اور نوحے سے کی نعد میں غزل بھی کہی ۔1965 کے بعد سے مولانا مظفر حسن جونپوری کے اصرار پر نعت ، منقبت اور قسیدے کہنا شروع کیئے ۔پہلا مرثیہ 1975 میں کہا ۔

اس کے علاوہ منظوم تاریخ گوئ بھی کی اور افسانہ نگاری بھی  اور یوں انکی ۔ نظم  و نثر میں پندرہ  سے زیادہ کتب شائع ہوئیں۔جن میں یہ بھی شامل ہیں

آیاتِ درد

احساسِ غم

لہو رنگ صحرا ( مرثیئے اور سلام)

باتیں ہماری رہ گئیں(حسین اعظمی کی شخصیت اور فن) 

شمشیر و سنان

سانجھ بھئ جو دیس 

MARASI E SAHIR LAKHNAWI

AZ ZAHRAA

DUA AUR SAHIFA E KAMILA

FAISLA

GAWAAHI

INSANIAT AUR HUSSAINIAT

INSANIAT AUR MAZHAB

PHIR AAJ HAI TALAB E JOHAR E SUKHAN MUJH KO

QUTAB SHAH SE SAHIR TAK

RASOOL MAQSAD E RESALAT AUR HUSSAIN a.s.

SAD SHUKR AAJ TABE SUKHANWAR BAHAL HAI

SAJDA

TALAB

TOTAL MARSIYAS = 12

Source: Mahnama KhairulAmal, Sahir Number, Mata e Gham and Aasar o Ifkar Academy, Pakistan

Special Thanks: Irum Naqvi, Pakistan for short bio

Total Page Visits: 901 - Today Page Visits: 1

eMarsiya – Spreading Marsiyas Worldwide